روزہ کا کفا رہ

روزہ کا کفا رہ :

ایک غلام کو ازاد کرے یا نہ ہو تو پئے در پئے (لگاتار)ساٹھ روزے رکھے اگر یہ بھی نہ ہو سکے تو ساٹھ مسکینوںکو دونوںوقت پیٹ بھر کھانا کھلائے یا اس کے مطابق کچا اناج دے ۔ نو ٹ:رمضان میںکئی روزے توڑے ہو ںاور کسی کا کفارہ نہ دیا ہو تو سب کے اوپر ایک ہی کفارہ کافی ہے لیکن ہر روز کی قضا علیحدہ علیحدہ ضروری ہے ۔ مسئلہ :کوئی کمزوری یا ضعف کی وجہ سے عمر بھرمیںکبھی بھی روزہ رکھنے کی طاقت نہ رکھتا ہو توا س کوچاہئے کہ ہر روزے کے بدلے ایک صدقہ فطرخیرات کرے ۔ مسئلہ : مسا فر کو اختیار ہیکہ روزہ رکھے یا نہ رکھے لیکن بے مشقت سفر میںروزہ رکھنا افضل ہے ۔ اور اگر روزہ رکھنے کی نیت کرنے کے بعد سفرکرے تواس کو پورا کرنا لازم ہے اگر توڑدے تو قضا لازم آئیگی کفارہ نہیں۔