روزہ
روزہ
روزے کی تعریف:اللہ تعا لیٰ کی عبادت کی نیت سے صبح صا دق سے سو رج ڈوبنے تک کھانے ، پینے اور جماع ( عورت کے ساتھ صحبت کرنے)سے اپنے آپ کو روکے رکھنے کا نام روزہ ہے۔
روزے کے واجب ہو نے کی شرطیں: 
(1)مسلمان ہو نا (2)عاقل ہو نا (3)بالغ ہونا ۔ مسئلہ :نیت بھی روزے کی صحیح ہو نے کی شرط ہے ۔یعنی اگر کو ئی نیت کے بغیر کھا نے ،پینے اور اگر جماع سے رکے رہا تو اسے روزہ نہ کہیںگے ۔ رمضان کے ادائی روزے ، نذر معین (خاص دنوںمیںمنت کئے ہوے روزے)سنت اور نفل روزے کے لئے نیت کرنے کا وقت آفتاب (سو رج ڈوبنے سے لیکرضحو ی کبری تک ہے اگر اسکے بعد کرے تو نیت صحیح نہ ہو گی اور اسی طرح رمضان کے قضاروزے اور غیر معین(کوئی بھی دن میںروزہ رکھنے کی منت کئے ہوے روزے )اور کفا رات کے روزے یا قضا کے روزے کی نیت کا وقت غروب آفتاب سے صبح صا دق سے پہلے تک ہے ۔ لیکن رات سے ہی نیت کر لینا مستحب ہے ۔اگر رات کو نیت کرنا ہو تو یوں کہے نویت ان ا صو م غدا للہ تعا لی من صوم رمضان:یا مختصرا نویت بصو م غدکہے ۔اور اگر دن میں نیت کرنا ہو تو یوںکہے نویت ان اصو م لھذالیوم۔مسئلہ :سحری کھانابھی نیت کرنے کے برابرہے ۔ مسئلہ :روزہ کی حالت میں افطار کی نیت کر نے یا اس کی دعا پڑھنے سے روزہ نہیںٹو ٹتا۔

روزے کے سنتیں:(1) سحری کرنا اور اس میںتاخیر کرنا
(2)افطار میںجلدی کرنا 
(3) کھجور نہ ہو نے پر پا نی سے افطا ر کرنا
(4)افطا ر سے پہلے یہ دعا پڑھنا اللھم لک صمت وبک ا منت وعلیک توکلت وعلی رزقک افطرت فتقبل منی
(5)غیبت ، جھو ٹ،گالی، گلوج ، وغیرہ تمام گناہوںاور بری با توںسے بچنا۔ ورنہ ثواب نہ ملے گا)وغیرہ ۔